Balochistan Urdu News



World latest News

پشاور: خودکش دھماکے میں 20 ہلاکتیں، شہر سوگوار


11/07/18   بی بی سی
پشاور میں عوامی نیشنل پارٹی کی انتخابی میٹنگ میں ہونے والے خودکش دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد 20 تک پہنچ گئی ہے جبکہ حملے میں ہلاک والے پارٹی رہنما ہارون بلور کو بدھ کو سپردِ خاک کیا جائے گا۔
لیڈی ریڈنگ ہسپتال کے حکام نے بی بی سی کے نامہ نگار عزیز اللہ خان کو بتایا ہے کہ منگل کی شب ہونے والے اس دھماکے کے مزید سات زخمی ہلاک ہو گئے ہیں۔
ہارون بلور کی میت رات گئے بلور ہاؤس منتقل کر دی گئی اور عوامی نیشنل پارٹی کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ ان کی نماز جنازہ بدھ کی شام پانچ بجے وزیر باغ میں ادا کی جائے گی جبکہ دھماکے میں ہلاک ہونے والے دیگر کئی افراد کی نماز جنازہ ادا کی جا چکی ہے۔
اس حملے کی ذمہ داری کالعدم تحریک طالبان نے قبول کی ہے اور ایک بیان میں عوام کو اے این پی کے دفاتر اور ان کے جلسوں اور کارنر میٹنگ سے دور رہنے کی دھمکی دی ہے۔
پولیس حکام کے مطابق یہ دھماکہ منگل کو رات 11 بجے کے قریب ہوا جب یکہ توت کے علاقے میں عوامی نیشنل پارٹی کی کارنر میٹنگ جاری تھی جس میں شرکت کے لیے ہارون بلور پہنچے تو انھیں خودکش حملہ آور نے نشانہ بنایا۔
عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ جلسے کے دوران جیسے ہی ہارون بلور کو تقریر کے لیے سٹیج پر بلایا گیا تو دھماکہ ہو گیا۔
ہارون بلور اور دیگر زخمیوں کو لیڈی ریڈنگ ہسپتال منتقل کیا گیا۔ ہسپتال کے ترجمان ذوالفقار باباخیل نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ بدھ کی صبح تک ہلاک ہونے والوں میں ہارون بلور سمیت 20 افراد شامل ہیں جبکہ 60 سے زیادہ لوگ زخمی ہیں۔
نامہ نگار کے مطابق اس واقعے کی اطلاع ملتے ہی عوامی نیشنل پارٹی کے کارکنوں کی ایک بڑی تعداد ہسپتال پہنچ گئی تھی اور احتجاج شروع کر دیا تھا۔
ہسپتال کے ترجمان کے مطابق ہارون بلور کی ہلاکت کی خبر ملنے پر مشتعل ہونے والے کارکنوں نے توڑ پھوڑ بھی کی جس کے بعد حالات قابو میں لانے کے لیے انتظامیہ کو فوج کی مدد حاصل کرنا پڑی۔
بدھ کو بھی پشاور شہر میں سوگ کا سماں ہے اور کاروبارِ زندگی معطل ہے۔
عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما میاں افتخار حسین نے اس دھماکے کی جامع تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ نتائج کو سامنے لایا جائے۔
میڈیا سے بات کرتے ہوئے انھوں نے’ تحقیقات میں دشمن کی پہچان کی جانی چاہیے بجائے کہ صرف بتایا جائے کہ خودکش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ بات یہاں تک نہیں رکے گی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ نتائج کو سامنے لایا جائے۔‘
میاں افتخار حسین نے ہارون بلور کی ہلاکت کو ظلم کی انتہا اور ناقابل برداشت قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس واقعے کے بعد ان کی جماعت آئندہ کے لائحہ عمل کے لیے سنجیدہ ہے اور اس کے لیے فیصلہ کرنا ہو گا۔
خیال رہے کہ یہ انتخابی مہم کے آغاز کے بعد خیبر پختونخوا میں کسی امیدوار کو نشانہ بنائے جانے کا دوسرا واقعہ ہے۔ اس سے قبل سات جولائی کو بنوں میں متحدہ مجلس عمل کے امیدوار کے قافلے پر بھی بم حملہ کیا گیا تھا جس میں وہ زخمی ہو گئے تھے۔

Back





World Latest News Updates, Balochistan News, Get the latest World News: international news, features and analysis from Balochistan, the Asia-Pacific, Europe, Latin America, the Middle East, South Asia, and the United States and Canada.