Balochistan Urdu News



World latest News

روسی صدر نے امریکا پر جوابی پابندیوں کے قانون پر دستخط کردیے


05/06/18   ویب ڈیسک اپ ڈیٹ
امریکا کی جانب سے روس پر لگائی گئی پابندیوں کا جواب دیتے ہوئے روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے جوابی پابندیوں کے بل پر دستخط کردیے۔
اس حوالے سے پریس ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق یہ قانون روس کے خلاف ’ انتقامی کارروائی‘ کرنے والی کسی ریاست یا شخص پر لاگو ہوگا اور یہ حکام کو غیر ملکی ریاستوں کے ساتھ بین الاقوامی تعاون روکنے، درآمدات اور برآمدات کی پابندیوں اور دیگر اقدامات کرنے کی اجازت دیتا ہے۔
خیال رہے کہ اقتصادی مفادات اور سیکیورٹی کے تحفظ کے لیے تشکیل دیے گئے اس بل کو دوما ریاست کے اسپیکر اور چاروں پارلیمان کے سربراہان کی جانب سے اپریل کے وسط میں پیش کیا گیا تھا، جسے مئی کے آخر میں روسی قانون سازوں کی جانب سے منظور کیا گیا تھا۔
واضح رہے کہ 6 اپریل کو امریکی سیکریٹری اسٹیو منیچن نے روسی اشرافیہ اور 12 کمپنیز پر نئی پابندیوں کا اعلان کیا تھا، اس کے علاوہ 17 سینئر روسی حکام اور ریاست کی ہتھیاروں کی برآمدی فیکٹری پر بھی پابندی لگائی گئی تھی۔
واشنگٹن کی جانب سے کہا گیا تھا کہ یہ اقدامات روس کی یوکرائن اور شام سے متعلق پالیسیوں، سائبر کارروائیوں کے ذریعے مغربی جمہوریت کو تباہ کرنے کی کوششوں کے جواب میں لگائی گئی، تاہم ان پابندیوں کے بعد 2014 میں ماسکو نے مغربی ممالک سے بڑی تعداد میں خوارک کی درآمدات ختم کردی تھی۔
دوسری جانب روسی صدر ولادی میر پیوٹن کا کہنا تھا کہ روس اور امریکا کو نئے ہتھیاروں کے حصول کی جنگ میں ساتھ چلنے سے گریز کرنا چاہیے۔
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ٹیلیفونک گفتگو کا حوالے دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ امریکی صدر نے نئے ہتھیاروں کی دوڑ پرتشویش کا اظہار کیا اور میں ان کی اس بات سے متفق ہوں، کیونکہ اس معاملے کی ابتدا ہم نے نہیں کی اور آپ سب جانتے ہیں کہ ہم اینٹی بیلسٹک میزائل کے معاہدے سے دستبردار نہیں ہوئے۔
انہوں نے کہا کہ امریکی صدر نے تجویز دی کہ ہمیں نئے ہتھیاروں کے حصول کی دوڑ سے گریز پر سوچنا چاہیے اور مجھے امید ہے کہ ہمارے درمیان یہ براہ راست کے ساتھ ساتھ ذاتی طور پر بھی شروع ہوسکتا ہے۔
ادھر روس کی جانب سے جوابی پابندیوں پر سی این بی سی نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ یہ قانون صدر کو دیگر چیزوں کے علاوہ دوست نہ ہونے والے ممالک کے ساتھ تعلقات ختم کرنے اوران ممالک کے ساتھ اشیاء کی تجارت بند کرنے کی طاقت دیتا ہے۔
تاہم روسی اور غیر ملکی تجارتی لابی کا کہنا تھا کہ اس طرح کا قانون کمپنیوں کو اس بات پر مجبور کرے گا کہ وہ روس اور بقیہ دنیا میں سے کسی ایک کے ساتھ کام کریں۔
اس حوالے سے گزشتہ ماہ روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے کہا تھا کہ مغربی پابندیوں کے خلاف انتقامی کارروائی سے روسی معیشت یا روس میں تجارت کرنے والے ساتھیوں کو کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

Back





World Latest News Updates, Balochistan News, Get the latest World News: international news, features and analysis from Balochistan, the Asia-Pacific, Europe, Latin America, the Middle East, South Asia, and the United States and Canada.